Home / interviews / Celebrity / شائستہ لودھی خصوصی انٹرویو

شائستہ لودھی خصوصی انٹرویو

ہڈرزفیلڈ ( تنویرکھٹانہ) شائستہ لودھی کے نام سے کون واقف نہیں ہے۔ شائستہ جن کا شمار بلاشبہ مارننگ شو سٹارٹ کرنے والوں میں ہوتا ہے۔ لیکن بہت کم لوگوں کو یہ معلوم ہو گا کہ انھوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز سوشو پولیٹکل شو سے اے آر واۓ ون سے کیا۔ ان دنوں وہ پاکستان ایچویمنٹ ایوارڈز کے سلسلے میں برطانیہ میں موجود ہیں اور اسی سلسلے میں ہم نے ان کا ٹیلیفونک انٹرویو کیا

image-1-660x330

شائستہ جی ہمیں پاکستان ایچویمنٹ ایوارڈز کے بارے میں بتائیں؟؟

شائستہ لودھی۔ پاکستان ایچویمنٹ ایوارڈ پچھلے سات سال سے ہو رہا ہے اور اس سال آٹھویں ایوارڈ تقریب ہے جو کہ دسمبر میں لندن میں منعقد ہو گی۔ اس ایوارڈ کا مقصد پاکستانی کمیونٹی کو ان کی خدمات پر چاھے وہ برطانیہ ہو یا پاکستان یادنیا میں کہیں بھی ان کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرنا ہے۔ مجھے افسوس ہے کہ پاکستان یا پاکستانیت پر کام بہت کم ہو رہا ہے اور امید کرتی ہوں ہے کہ اس ایونٹ میں کمیونٹی کی بھرپور شرکت اس ایونٹ کو اور پاکستان کو مزید تقویت دے گی۔

سوال۔ سننے میں یہ آیا ہے کہ آپ ایکٹنگ شروع کر رہی ہیں کیا آپ نے پہلے بھی ایکٹنگ کی ہے؟؟

شائستہ لودھی ۔ جی نہیں میں نے پہلے ایکٹنگ نہیں کی اور یہ میرا پہلا تجربہ ہے ۔ میں مارننگ شوز کر کر کے اب اس سے بریک چاھتی تھی اور یہ فہد مصطفی کی پروڈکشن میں بننے والا بیس اقساط کا ڈرامہ ہے جس کے لیے فہد نے مجھے خود کہا اور میں نے بھی کہانی جو کہ مارننگ شو کو دیکھنے والی ایک لڑکی کی کہانی ہے کو سننے کے بعد ڈرامے میں کام کرنے کے حامی بھری ۔ ابھی میرا مزید ڈراموں میں کام کرنے کا ارادہ بہرحال ہے مگر میں اس ڈرامے کی فیڈ بیک دیکھ کر ہی اگلے کسی پراجیکٹ پر کام کروں گی۔

سوال۔ کیا آج کل جو مارننگ شو ہو رہے ہیں آپ ان سے مطمئن ہیں اور کیا آئندہ آپ مارننگ شو کریں گی؟

جی نہیں اگر میں مطمئن ہوتی تو میں بلکل مارننگ شو نہیں چھوڑتی مارننگ شو کا جو ٹرینڈ چل پڑا ہے اس میں ہوسٹ کو نہ چاھتے ہوۓ بھی بہت سا مواد شامل کرنا پڑتا ہے جو کہ اب میرے کیے قابل قبول نہیں ہے۔ میں بلکل ضرور مارننگ شو کروں گی لیکن اپنی مرضی سے جہاں میں اپنی مرضی کا مواد شامل کر سکوں اور کسی کو کوہئ اعتراض نہ ہو ابھی مارننگ شوز میں ہمیں پروڈیوسر کی مرضی کا مواد شامل کرنا ہوتا ہے جو کہ ہم جانتے ہیں غلط ہے لیکن پروگرام کے لیے یہ کرنا پڑتا ہے۔

سوال۔ آپ خواتین کے لیے کیا پیغام دیں گی کہ انھیں اس فیلڈ میں آنا چاہیے اور خصوصا برطانیہ میں بسنے والی خواتین کو کیا اس فیلڈ میں آنا چاہیے ؟؟؟

شائستہ لودھی۔ بلکل اس انڈسٹری میں ضرور خواتین کو آنا چاہیے اور جو خواتین اپنے اوپر یقین رکھتی ہیں اور کچھ کرنے کا عزم ہے ان کے کیے بہت کچھ ہے اس انڈسٹری میں اور برطانیہ میں موجود لڑکیاں جو اس فیلڈ میں آنا چاھتی ہیں ان کے کیے بڑی مثال آرمینا خان کی ہےاور پاکستان کو اور اس انڈسٹری کو ضرورت ہے نوجوان پڑھے لکھی خواتین کی۔

سوال۔ شوبز میں آپ اور ساحر کے علاوہ بھی آپ کی فیملی سے کوہئ اور فرد ہے؟؟؟ اور کیا آپ کو گانوں کا شوق ہے؟؟

شائستہ لودھی۔ جی نہیں ہم دونوں کے علاوہ شوبز میں ہماری فیملی سے کوہئ اور نہیں ہے اورہم شوبز فیملی سے تعلق نہیں رکھتے۔ جی ہر کوہئ تھوڑی بہت سنگنگ کا شوق رکھتا ہے لیکن میں سنتی ہوں گاتی نہیں ہوں۔

سوال۔ آپ نے اپنے کئیریر کا آغاز سوشو پولیٹکل شو سے کیا کیا ہم آنے والے دنوں میں آپ کو یہ شو دوبارہ کرتے ہوۓ دیکھ سکتے ہیں؟؟؟

شائستہ لودھی۔ جی بلکل سوشل ایشوز پر ہم بہت جلد ہی کوہئ شو لیکر آئیں گے کیونکہ فلحال میں کوکنگ شو کے سیزن ٹو میں بزی ہوں تو میری ساری توجہ اس شو پر ہے لیکن جی آنے والے دنوں میں شاید ایک سوشو پولیٹکل شو بھی کروں۔

شائستہ لودھی پاکستان ایچویمنٹ ایوارڈز کو ہوسٹ بھی کر رہی ہیں اور اس شو میں وہ نامزد بھی ہیں لیکن چونکہ یہ پبلک چوائس ایوارڈز ہیں تو اس کا فیصلہ ووٹنگ سے ہوگا۔

About admin

Check Also

پاکستانی ڈرامہ انڈسٹری کے درخشاں ستارے عدنان صدیقی کیساتھ خصوصی بات چیت

پاکستانی ڈرامہ انڈسٹری کے درخشاں ستارے عدنان صدیقی کیساتھ خصوصی بات چیت ہڈرزفیلڈ ( تنویر …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *